ہے کرم کا ساٸباں درود

ہے کرم کا ساٸباں درود

Table of Contents

ہے کرم کا ساٸباں درود

واصف رضا واصف

حاصل ِ قرارِ جاں درود
ماحی ِ غم ِ نہاں درود

وجہ ِ انقطاع ِ انحطاط
اعتلاے عاشقاں درود

پر ہے فرحت و سرور سے
انبساط کا جہاں درود

خوشبوے نسیمِ صبح دم
خیر کا ہے گلستاں درود

ورد ِ رہروان ِ معرفت
نور عین سالکاں درود

غم کی چلچلاتی دھوپ میں
ہے کرم کا ساٸباں درود

رحمت حبیب رب کا ہے
ایک بحر بے کراں درود

حیطہ ٕ بیاں سے ہے پرے
لے گیا کہاں کہاں درود

لفظ لفظ کاٸنات نور
تابشِ مہِ اماں درود

واصف ِ جمالِ یار سن
برکتوں کا ہے نشاں درود

واصف رضاواصف

مدھوبنی بہار

ورد اہل وفا درود شریف

تخیل سے وراہے عزو جاہ مفتی اعظم

وفا شناس سخنور ہیں کعب بن مالک

Like this article?

Share on Facebook
Share on Twitter
Share on Whatsapp
Share on E-mail
Share on Linkedin
Print (create PDF)

Leave a comment